فہرست الطاہر شمارہ نمبر 47
رمضان 1428ھ بمطابق اکتوبر 2007ع

آپ کے مسائل اور ان کا حل

علامہ ساجد علی فاروقی طاہری

 

سوال: جب قرآن شریف میں خدا تعالیٰ کا صاف حکم ہے کہ مجھ سے مانگو تو پھر وسیلہ بنانا جائز ہے؟ (احمد علی چنہ)

جواب: اولیاء اللہ کو مخاطب کرکے صرف انہیں سے مانگنا غیراللہ سے مانگنے کے حکم میں آتا ہے، مگر خدا سے مانگنا اور یہ کہنا یا الٰہی اپنے فلاں نیک بندے کے صدقے میری یہ مراد پوری کردے، بلکل جائز و درست ہے۔ صحیح بخاری شریف کے جلد ایک صفحہ 137 پر امیر المؤمنین حضرت عمر رضی اللہ عنہ کی یہ دعا منقول ہے

اللّٰہم انا کنا نتوسل الیک بنبینا صلّی اللہ علیہ وسلم فنسقینا وانا نتوسل الیک بعم نبینا فاسکنا۔

ترجمہ: اے اللہ ہم تمہاری دربار میں اپنے نبی صلّی اللہ علیہ وسلم کے توسل کے ذریعے دعا کرتے تھے، پھر آپ ہمیں باران رحمت عطا فرما دیتے تھے اور اب ہم اپنے نبی کے چچا (حضرت عباس رضی اللہ عنہ) کے ذریعے توسل کرتے ہیں، تو ہمیں باران رحمت عطا فرما۔ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ اولیاء اللہ اور اہل بیت عظام کے توسل سے دعا مانگنا نہ صرف جائز ہے بلکہ خلفائے راشدین کا طریقہ ہے اور اس طریقہ سے اللہ تعالیٰ جلد عطا فرما دیتا ہے۔

سوال: صدقہ فطر کس پر واجب ہے؟

جواب: صدقہ فطر ہر مسلمان، آزاد، صاحب نصاب پر واجب ہے۔

سوال: صدقہ فطر کون سے شخص کو دیا جائے گا؟

جواب: جن لوگوں کو زکوٰۃ دی جاتی ہے ان کو صدقہ فطر دیا جائے گا۔ یعنی فقیر، مسکین، عامل، رقاب، فی سبیل اللہ یا مسافر، موجودہ دور میں مدرسہ وغیرہ، جس شخص پہ اتنا قرض ہو کہ صاحب نصاب نہیں ہے۔

سوال: کون سی چیز سے روزا ٹوٹ جاتا ہے؟

جواب: کوئی چیز کھانے، پینے، جماع کرنے سے، قے کرنے سے، خون زیادہ نکلنے سے روزا ٹوٹ جاتاہے۔ حقہ، سگریٹ وغیرہ سے روزہ ٹوٹ جاتا ہے۔

سوال: اس وقت صدقہ فطر کی کتنی قیمت ہے؟ (مظفرعلی قائم خانی)

جواب: تقریباً 30 روپیہ ہر شخص پر واجب ہے جو صاحب نصاب ہو۔