فہرست الطاہر
شمارہ 48، ذیقعد 1428ھ بمطابق دسمبر 2007ع

آپ کے خطوط

 

محترم قارئین! السلام علیکم!

خدا آپ کو سدا خوش رکھے۔ الطاہر شمارہ نمبر 48 آپ کے سامنے ہے۔ الطاہر کی بہتری کے لیے آپ کی تجاویز و آراء ہمارے لیے سب سے بہتر رہنمائی کا کام سرانجام دیتی ہیں۔ آپ کی تعریف ہمارے ارادوں کے لیے مزید تقویت اور آپ کی تنقید ہمارے لیے مزید بہتری کا سبب بنتی ہے۔ لہٰذا خطوط لکھتے وقت الطاہر کی خوبیوں و خامیوں پر ضرور تبصرہ کریں۔

آپ کا بھائی محمد جمیل عباسی طاہری


 

شمارہ نمبر 47 پڑھا۔ ’ذرا کاغان تک‘ کی آخری قسط پڑھی، بہت اچھی لگی۔ آپ نے ہمارے خطوط اور دیگر مواد گلہائے رنگ رنگ میں شامل کیا ہے جسے دیکھ کر بڑی خوشی ہوئی۔ اس مرتبہ الطاہر کتاب بہت دیر سے 21 اکتوبر کو ملا، اس لیے ہمیں یہ خط اور گلہائے رنگ بھیجنے میں دیر ہوگئی۔ برائے مہربانی ہماری یہ بھیجی ہوئی چیزیں ضرور شایع کیجیے گا۔

سیماں طاہری پالاری ۔ دنبہ گوٹھ کراچی


 

شمارہ نمبر 47 پڑھ کر بہت اچھا لگا۔ اس بار ٹائٹل بہت پیارا تھا اور مضامین کی تو کیا بات ہے، وہ تو سب اپنی مثال آپ تھے۔ آپ کے مسائل اور ان کا حل دیکھ کر بہت خوشی محسوس ہوئی۔ اس عاجز نے ایک مضمون بھیجا تھا ”تبلیغ کی اہمیت“، اس کا کیا ہوا، اگر وہ قابل اشاعت نہیں تو مہربانی کرکے بتا دیجیے۔

ط طاہری ۔ لاڑکانہ

بہن ط طاہری صاحبہ! آپ کا مضمون مزید توجہ کا طالب ہے۔ آپ اپنی کوشش جاری رکھیں، انشاء اللہ جلد تحریری صلاحیت پیدا ہوجائے گی۔


 

شمارہ نمبر 47 پڑھا۔ پڑھ کر دل کو بہت سکون ملا۔ عرض ہے کچھ Young generation کو Responce دیں۔

محمد رفیق حنفی ۔ کراچی

حنفی صاحب آپ کا مضمون اس بار شمارہ میں شامل ہے۔ امید ہے کہ آئندہ بھی آپ کی تحریریں الطاہر کی زینت بنتی رہیں گی۔


 

شمارہ نمبر 47 پڑھ کر بہت اچھا لگا۔ اس میں آپ نے دوبارہ ’آپ کے مسائل اور ان کا حل‘ شروع کیا، بہت خوشی ہوئی۔ آپ اس کو ضرور شایع کیا کریں۔ اس سے ہمارے علم میں اضافہ ہوتا ہے۔ ہماری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ الطاہر رسالے کو اور ترقی دے اور اسے تا دیر تک قائم رکھے۔

محمد عمران نثار طاہری ۔ پیر مراد کالونی وہاڑی


 

شمارہ نمبر 47 پڑھا اور دلی سکون ملا۔ ماشاء اللہ اچھا لکھا ہوا تھا، ہمیں سب کو پڑھ کر عمل کرنے کی اللہ تعالیٰ ہدایت عطا فرمائے۔ آمین۔

فقیر شہبار احمد


 

الطاہر شمارہ نمبر 47 پڑھ کر پھر سے روحانیت کو تازگی ملی۔ تمام مضامین اپنی مثال آپ تھے۔ رسالے کے ٹائٹل نے بھی متاثر کیا۔ رسالہ ماہوار کردیں شکریہ۔

ہومیو ڈاکٹر محمد اشرف ملک ۔ بھریاروڈ


 

شمارہ نمبر 47 پڑھ کر بہت خوشی ہوئی۔ درس قرآن، درس حدیث، حدود اللہ اور تمام مضامین بہت پیارے اور اچھے لگے۔ آپ کا دینی مسائل کے بارے میں سلسلہ بڑا پیارا اور بہتر اقدام ہے۔ میری دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ حضور قبلہ عالم کی جماعت اور تمام اہل اسلام پر اپنی رحمت کا سایہ قائم رکھے۔

محمد حفیظ طاہری۔۔ وہاڑی


 

یہ عاجز الطاہر رسالہ خریدتا ہے اور خوب مطالعہ کرتا ہے۔ اور اپنے دوستوں کو بھی گفٹ کرتا ہے۔ اب یہ رسالہ دوماہی ہوا ہے، امید ہے کہ آپ جیسے نوجوان اس الطاہر کو ہفتہ وار شایع کرنے کی کوشش کریںگے۔

محمد علی انگاریہ ۔ ٹول پلازہ کراچی

بھائی محمد علی صاحب سراہنے کا شکریہ۔


 

الطاہر ایک انمول موتی ہے، اس نے ہمارے دل جیت لیے ہیں۔ اس کے مطالعے سے ایمان کو تازگی، ذہنوں کو پاکیزگی، روحوں کو سرشاری اور عقل کو بیداری حاصل ہوتی ہے۔ الطاہر شمارہ نمبر 47 پڑھا بہت اچھا لگا۔ خاص طور پر یہ ’ذرا کاغان تک‘ کی آخری قسط بہت ہی اچھی لگی۔ خوشی ہوئی آپ نے ’ذرا کاغان تک‘ کی قسط کو لکھا۔

یاسمین طاہری ۔ دنبہ گوٹھ کراچی


 

میں آٹھویں کلاس کا اسٹوڈنٹ ہوں۔ میں الطاہر رسالہ بڑے شوق سے پڑھتا ہوں۔ میں پہلی مرتبہ اس بزم میں خط لکھ رہا ہوں، برائے مہربانی اس کو ردی کی ٹوکری کی نظر ہونے سے بچائیے گا۔

اویس محمد حسین طاہری ۔ چک نمبر 208 ر۔ب فیصل آباد


 

چند ماہ پہلے ایک منقبت بھیجی تھی جو کہ آپ نے مختصر طور پر شایع فرمائی تھی۔ اتنے عظیم رسالے میں جگہ ملنا میرے لیے بہت ہی بڑا اعزاز ہے۔ اسی اعزاز سے حوصلہ پاتے ہوئے ایک مختصر سی دعا بھیج رہی ہوں، اس امید پر کہ محروم نہیں رہوں گی۔

مسز اعجاز ۔ راولپنڈی


 

رسالہ الطاہر پڑھا بہت متاثر ہوا۔ آپ بہت ہی اچھا کام کررہے ہیں۔ دعا ہے کہ اللہ تعالیٰ آپ کو اور بھی ترقی دے آمین۔ ایک رپورٹ بھیج رہا ہوں امید ہے کہ شایع کریں گے۔

سکندر علی رند طاہری ۔ شاہ پور چاکر، ضلع سانگھڑ