فہرست الطاہر
شمارہ 50، ربیع الاول 1429ھ بمطابق اپریل 2008ع

گلہائے رنگ رنگ

 

فرمان باری تعالیٰ

  • تم مجھے یاد کرو میں تمہیں یاد کروں گا۔
  • جو شخص اللہ تعالیٰ سے ڈرتا ہے اللہ تعالیٰ اسکے لیے خوش حالی پیدا کرتا ہے اور اسکو ایسی جگہ سے رزق عطافرماتا ہے جو اس کے وہم وگمان میں نہیں ہوتا۔
  • اللہ تبارک وتعالیٰ کبھی بھی اس قوم کی حالت نہیں بدلی جس کو خود اپنی حالت بدلنے کا خیال نہ ہو۔

مرسلہ: محمد عالم طاہری۔۔ اوتھل

 

میلاد مصطفی صلّی اللہ علیہ وسلم

حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ کا ارشاد ہے فرمایا ”جس نے نبی اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم کے میلاد پاک پر ایک درہم بھی خرچ کیا۔ کان رفیقی فی الجنۃ۔ وہ جنت میں میرے ساتھ ہوگا۔“

حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کا ارشاد ہے فرمایا کہ ”جس نے بھی سرور کائنات صلّی اللہ علیہ وسلم کے میلاد پاک کی تعظیم و تکریم کی فقد احیاء الاسلام۔ تحقیق اس نے اسلام کو زندہ کیا۔“

حضرت عثمان ذوالنورین رضی اللہ عنہ نے فرمایا کہ جس نے حضرت نبی اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم کے میلاد پر ایک درہم خرچ کیا فکان شہید غزوۃ بدر وحنین۔ گویا وہ غزوہ بدر و حنین میں شریک ہوا۔“

حضرت مولا علی مشکل کشا رضی اللہ عنہ کا ارشاد ہے ”جس نے میلاد کی تعظیم کی اور اسے بیان کرنے کی کوشش کی وہ دنیا سے ایمان کی حالت میں جائے گا۔ ویدخل الجنت بغیر حساب اور بغیر حساب کے جنت میں داخل ہوگا۔“ (النعمۃ الکبریٰ)

مرسلہ: شاہ نواز صالح راہوجو طاہری۔ سیتا روڈ

 

ہنسنا منع ہے

مالک نوکر سے ”تم نے ایک خط ڈالنے میں اتنی دیر لگادی؟“

نوکر ”کیا کرتا جناب! جس لیٹر باکس پر بھی گیا، اس پر تالا لگا ہوا تھا۔“

مرسلہ: نذیر احمد رونجہ طاہری۔۔ بیلہ بلوچستان

 

بچپن

بچپن کے وہ دکھ بھی کتنے اچھے تھے
تب تو صرف کھلونے ٹوٹا کرتے تھے

پاؤں مار کے خود بارش کے پانی میں
اپنی ناؤ آپ ڈبویا کرتے تھے

اب تو ایک آنسو بھی رسوا کرتا ہے
بچپن میں دل کھول کر رویا کرتے تھے

مرسلہ: پیر بخش رودینی بروہی۔۔ بلوچستان

 

روشن باتیں

جو لوگ اللہ کا شکر ادا کرتے ہیں وہ شکوے شکایت نہیں کرتے۔

اگر آج کا رزق تجھ پر تنگ ہے تو کل تک صبر کر شاید کہ زمانے کے مصائب تجھ سے دور ہوجائیں۔

زندگی کے آدھے غم، انسان دوسروں سے غلط توقعات وابستہ کرکے خریدتا ہے۔

پوشیدہ طور پر دیا ہوا صدقہ اللہ تعالیٰ کے غضب کو بجھاتا ہے۔

مرسلہ: منیر احمد رونجہ طاہری، گوٹھ نوتانی بیلہ بلوچستان

 

غور و فکر

تفکر فی خلق السمٰوٰت والارض

عقلمند لوگ یا اہل اللہ کثرت سے اللہ کا ذکر اور کائنات میں اللہ کی تخلیق کی ہوئی چیزوں کے بارے میں غور و فکر کرتے ہیں، یعنی یوں فرماتے ہیں: ربنا ماخلقت ہٰذا باطلا۔

ترجمہ : یا اللہ یہ سب تونے بے فائدہ نہیں بنایا۔

یعنی ذکر اللہ کرنا عبادت ہے ویسے ہی فکر فی آیات اللہ کرنا بھی عبادت ہے اور اسی کا نام معرفت ہے۔

حضرت خواجہ حسن بصری رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا ”تفکر ساعۃ خیر من قیام لیلہ“ یعنی ایک گھڑی اللہ کی قدرت و آیات میں غور کرنا ایک رات کی نفل عبادت سے بہتر ہے۔

حضرت بشر حافی رحمۃ اللہ علیہ نے فرمایا کہ اگر لوگ اللہ کی عظمت میں تفکر کریں تو کبھی اسکی معصیت و نافرمانی نہ کریں۔

مرسلہ: بلال احمد طاہری، جنرل سیکریٹری ج۔ ا۔ م برانچ حب

 

جھوٹ بولنے والوں کے لیے وعید

ایک دفعہ ایک صحابی رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے حضور اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم سے پوچھا ”یا رسول اللہ صلّی اللہ علیہ وسلم کیا مسلمان زنا کرسکتا ہے؟“

آپ صلّی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”ہاں کرسکتا ہے۔“

عرض کیا یا رسول اللہ صلّی اللہ علیہ وسلم کیا مسلمان بے انصاف ہوسکتا ہے؟

آپ صلّی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”ہاں ہوسکتا ہے۔“

پھر عرض کیا یا رسول اللہ صلّی اللہ علیہ وسلم کیا مسلمان جھوٹا ہوسکتا ہے؟

آپ صلّی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا ”نہیں مسلمان جھوٹ نہیں بول سکتا۔ “

مرسلہ:وحید علی بھٹی

 

انمول موتی

  • اپنے دوست کو خلوص دو مگر راز نہ دو۔
  • دنیا کی سب سے بڑی غریبی بد عقلی ہے۔
  • تمہارے سب سے بڑے دشمن تمہارے ہم نشین ہیں۔
  • کمزوریوں میں سب سے بڑی کمزوری مایوسی ہے۔
  • شیریں کلام اور خوش خلقی کے ساتھ محبت واجب ہوتی ہے۔

مرسلہ: حافظ محمد انور قمبرانی طاہری، نوتانی گوٹھ بیلہ

 

کام کی باتیں

انسان کی فطری کمزوری ہے کہ وہ اس بات کو بار بار سننا چاہتا ہے جو اسے پسند آئے۔

جو آدمی اپنی عظمتوں کے ڈھول بجاتا ہے وہ عملی طور پر ڈھول کی طرح اندر سے کھوکھلا ہوتا ہے۔

کسی کو پالینا محبت نہیں بلکہ کسی کے دل میں جگہ بنالینا محبت ہے۔

ناسمجھ لوگ تب تک اچھے لگتے ہیں جب تک وہ خاموش رہتے ہیں۔

مرسلہ: فقیر عبدالشکور خاصخیلی طاہری، بیلہ بلوچستان

 

اچھا اخلاق تین قسم پر ہے

اللہ تعالیٰ کے ساتھ اچھا اخلاق یہ ہے کہ اللہ تعالیٰ کے حکم کو پابندی سے بغیر ریاء کے بجالانا۔

مخلوق کے ساتھ اچھا اخلاق یہ کہ بندہ بڑے اور بزرگ لوگوں کی عزت کی حفاظت کرے، اپنے سے چھوٹوں کے ساتھ شفقت کے ساتھ پیش آئے اور اپنے ہم عصر اور برابر والوں سے انصاف کرے، اپنے اس اخلاق کے بدلے کسی سے عیوض یا انصاف طلب نہ کرے۔

مرسلہ: سلمان محمود، کراچی

 

مسکراہٹ ایکسپریس

ایک آدمی میز پر کھڑا دیوار پہ رنگ و روغن کررہا تھا۔ اس کی بیوی نے کہا کہ آپ برش کو ذرا مضبوطی سے پکڑیے میں میز لیے جارہی ہوں۔

ایک شخص جلدی میں تھا اس دوسرے شخص سے پوچھا ”کیا ٹائم ہوا ہے؟“ اس شخص نے ایک نظر گھڑی پر ڈالی اور کہا ”نونے پو“۔

مرسلہ: بلال علی طاہری، مولیٰ مدد لیاری، کراچی

 

اللہ کا شکر کیسے ادا کروں؟

کسی نے حکیم بوعلی سینا سے پوچھا ”آپ کے دن کیسے گذر رہے ہیں؟“

جواب دیا ”گناہ گار ہونے کے باوجود اللہ تعالیٰ کی نعمتیں مجھ پر برس رہی ہیں۔ سمجھ میں نہیں آتا کہ میں کس بات پر اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کروں، نعمتوں کی کثرت پر یا گناہوں سے در گذر کرنے پر؟“

مرسلہ: محمد وسیم طاہری، مہاجر کیمپ کراچی

 

منقبت شریف

خواجہ سجن سائیں کردو کرم خدارا
عاجز گنہگار ہے کردو نظر خدارا

یہ تیرا کرم ہے مرشد دامن میں لے لیا مجھے
ورنہ گنہگار کا کون ہے یہاں سہارا

جب بھی مشکلوں میں، میں نے تمہیں پکارا
آئے فورا مدد کو میں نے جب جہاں پکارا

پیر مٹھا سائیں کا صدقہ سوہنڑے سائیں کا صدقہ
عاجز گنہگار ہے کردو نظر کرم خدارا

گھبرانا نہ نوید تو قبر میں آئیں گے ہم
کہہ دیں گے ہم وہاں بھی یہ ہے غلام میرا

شاعر و مرسلہ: محمد نوید طاہری، مہاجر کیمپ کراچی

 

یاد رکھنے کی باتیں

اپنی زندگی کے اس دن پر رو جو گذر گیا اور تونے کوئی نیکی نہ کی۔

جس نے علم حاصل نہ کیا وہ یتیم ہے۔

ایک طالب علم کی طاقت ایک لاکھ جاہلوں سے زیادہ ہوتی ہے۔

طاقتور اور پہلوان وہ ہے جو غصہ کی حالت میں خود پر قابو رکھے۔

جو نرمی سے محروم رہا وہ ہر قسم کی بھلائی سے محروم رہا۔

زبان ہی دوست کو دشمن اور دشمن کو دوست بناتی ہے۔

کسی کا اخلاق جاننا ہو تو اسے غصہ کی حالت میں دیکھو۔

مرسلہ: مصباح صدیق طاہری نقشبندی، نواب شاہ

 

سنہرے اقوال

زندگی ایک طویل سفر ہے جسکی منزل قبر ہے۔

دشمنوں کے ساتھ گفتگو ایسے کرو اگر دوست بھی بن جائے تو شرمسار نہ ہونا پڑے۔

دنیا میں وہی لوگ سربلند ہیں جو تکبر کے تاج کو دور پھینک دیتے ہیں۔

اتنا زیادہ ہوشیار بھی نہ بنو کہ سورج پر قدم رکھ دو پاؤں جل جائے۔

اچھا دوست بنانے کے لیے اچھا دوست بننا پڑتا ہے۔

مرسلہ: فقیر محمد سعید موندرہ طاہری، موندرہ کالونی حب

 

اشعار

میرا ہر لفظ دعا دعا
آنسوؤں سے دھلا ہوا

غم نہ کبھی آپ کو ملے
خوشی آپ کے ہم قدم چلے

مرے رسالے تاقیامت
نگہبانی خدا کرے

مرسلہ: سلمان محمود، کراچی

 

صحابہ کرام رضی اللہ عنہم

اسلام کے سب سے کم عمر سپہ سالار حضرت اسامہ بن زید رضی اللہ عنہ تھے۔

صحابہ کرام میں سب سے پہلے قرآن پاک حضرت عثمان رضی اللہ عنہ نے حفظ کیا تھا۔

سید الشہداء حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کے علاوہ حضرت حمزہ رضی اللہ عنہ کو بھی کہا جاتا ہے۔

مدینہ میں سب سے پہلے ایاس بن معاذ رضی اللہ عنہ نے اسلام قبول کیا۔

اسلام کی خاطر پہلی بار تلوار حضرت زبیر بن العوام رضی اللہ عنہ نے بلند کی تھی۔

مرسلہ: فقیر محمد حیات لاسی طاہری، محمود آباد حب

 

سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ

  • سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کا پیدائشی نام عبدالکعبہ تھا۔
  • سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کا تعلق قریش کی شاخ بن تیم بن مرہ سے تھا۔
  • سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ نبی کریم صلّی اللہ علیہ وسلم سے ڈھائی برس چھوٹے تھے۔
  • سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ نے کل چار شادیاں کی تھیں۔
  • سیدنا ابوبکر صدیق اکبر رضی اللہ عنہ کی فضیلت کے متعلق قرآن پاک میں 17 آیات ہیں۔
  • سرور عالم صلّی اللہ علیہ وسلم کے ہمران سب سے پہلا عمرہ کرنے کا فخر ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ کو حاصل ہے۔

مرسلہ:فقیر محمد سعید موندرہ طاہری، موندرہ کالونی حب

 

ہنسنا منع ہے

ایک فلسفی استاد اور ایک شاگرد نے ایک بیمار حکیم کو ڈاکٹر سے دوا لیتے دیکھا تو استاد نے بڑے جذباتی انداز میں شاگر سے کہا ”دیکھا تم نے حکیم بھی بیمار ہوجایا کرتے ہیں“

شاگرد نے کہا ”میں آپ کو اس سے بھی بڑی بتاؤں؟“

استاد ”یہی نا کہ ڈاکٹر بھی بیمار ہوتے ہیں“

شاگر ”نہیں اس سے بھی بڑی بات“

استاد نے جھنجھلا کر کہا ”وہ کیا؟“

شاگرد ”یہ مر بھی جایا کرتے ہیں۔“

مرسلہ: محمد احسن علی آرائیں طاہری نقشبندی، نوابشاہ

 

اسلامی مہینوں کے نام

محرم: محرم کی لغوی معنیٰ ہے حرمت والا حرام کیا گیا اور ممنوع وغیرہ ہیں۔ ایام جاہلیت میں اس مہینے کا نام صغر الاولیٰ تھا۔ یہ چار متبرک مہینوں میں سے ایک ہے۔ قبل اسلام بھی اس میں لڑائی ممنوع تھی۔

صفر: صفر کی لغوی معنیٰ خالی یا زرد کے ہیں۔ شروع شروع میں یہ مہینہ موسم خزاں میں آتا تھا جب درختوں کے پتے زرد ہوجاتے تھے۔ صفر کے ایک معنیٰ اور بھی بیان کیے جاتے ہیں یعنی پیٹ کے وہ کیڑے جو بھوک لگنے پر آنتوں کو کاٹتے ہیں۔ چونکہ یہ مہینہ خزاں میں آتا تھا اسلیے اکثر قحط کی نوبت آتی تھی۔

ربیع الاول: ربیع کی لغوی معنیٰ موسم بہار کی بارش کے ہیں اس طرح ربیع الاول کا مطلب ہوا بہار کا پہلا مہینہ۔

مرسلہ: مکی مدنی، حیدرآباد

 

معلومات

  • خوشبوؤں کا شہر پیرس کو کہا جاتا ہے۔
  • بحر ہند کا موتی سری لنکا کو کہتے ہیں۔
  • چڑھتے سورج کی زمین جاپان کو کہتے ہیں۔
  • جزیروں کا دیس انڈونیشیا کو کہاجاتا ہے۔
  • گنبدوں کا شہر استنبول کو کہتے ہیں۔
  • صحرا کا چمن حبشہ (ایتھوپیا) کو کہا جاتا ہے۔
  • خاموش سحر کی سرزمین کو ریا کا لقب ہے۔

مرسلہ: فقیر محمد حیات لاسی طاہری۔۔ محمود آباد حب

 

دلچسپ معلومات

  • شتر مرغ کی آنکھ اس کے دماغ سے بڑی ہوتی ہے۔
  • گروپ ”O“ کا خون ہر شخص کو دیا جاسکتا ہے۔
  • سورج کی روشنی زمین تک تقریباً 8 منٹ میں پہنچتی ہے۔
  • مگرمچھ اپنی زبان باہر نہیں نکال سکتا۔
  • چیونٹی کی آنکھیں نہیں ہوتیں وہ ایک دوسرے کی خوشبو سونگھ کر چلتی ہیں۔

مرسلہ: محمد رفیق اینڈ غلام مصطفیٰ، درگاہ اللہ آباد شریف

 

تین چیزیں

  • خلوص دل سے کرنی چاہییں ”رحم، کرم، دعا“
  • بھائی کو بھائی کا دشمن تین چیزیں بنادیتی ہیں ”زن، زر، زمین“
  • تین چیزیں یاد رکھنا ضرور ی ہیں ”سچائی، فرض، موت“
  • تین چیزیں انسان کو ذلیل کرتی ہیں ”چوری، چغلی، جھوٹ“

مرسلہ: زاہدہ طاہری، ٹنڈوالہیار

 

ہنسی آئی

احمد ”دادی جان امجد نے مجھے مارا ہے“

دادی ”آنے دو امجد کو میں کچا چبا جاؤں گی“

احمد لیکن دادی جان آپ کے تو دانت ہی نہیں ہیں۔“

مرسلہ: ابو العارف طاہری، اوتھل بلوچستان

 

معذرت کے ساتھ

اس عاجز کو نہایت افسوس کے ساتھ تحریر کرنا پڑرہا ہے کہ عوام الناس علم حاصل کرنے کے ذوق و شوق میں کمی واقع ہوچکی ہے۔ جس کا اہم سبب تو جامعات کی Fees اور دیگر اخراجات میں بے حد اضافہ ہوگیا ہے۔ غریب متوسط طبقے کے لیے تعلیم حاصل کرنا محال ہوچکا ہے۔ اس وجہ سے بہت ہی ذہین اور ہوشیار بچے اعلیٰ تعلیم سے محروم ہورہے ہیں۔ سیلف فنانس سہولت سرمایہ دار لوگوں کے ان بچوں کو دے کر اعلیٰ کلاسوں میں داخلے دیے جارہے ہیں جو کہ انٹری ٹیسٹ بھی پاس نہیں کرسکتے جب ایسے بچوں کو داخلے ہوں گے تو معیارت تو گرتا ہی جائے گا۔

مرسلہ: محمد محی الدین صدیقی، گلشن حدید کراچی

 

کام کی باتیں

  • خاموشی انسان کا وقار بڑھاتی ہے۔
  • مسکراہٹ روح کا دروازہ کھول دیتی ہے۔
  • جس دل میں برداشت کرنے کی قوت ہو وہ کبھی شکست تسلیم نہیں کرتے۔

مرسلہ: محمد رمضان مغل، ماتلی

 

گناہ

جان ملٹن نے کہا کہ پہلے گناہ پر لطف معلوم ہوتا پھر وہ آسان ہوجاتا ہے، پھر اس سے مسرت ہونے لگتی ہے، پھر بار بار کیا جاتا ہے، پھر وہ عادت بن جاتی ہے، پھر آدمی گستاخ بن جاتا ہے، اور پھر کبھی نہ پچھتانے کا تہیہ کرلیتا ہے، اور پھر وہ تباہ و برباد ہوجاتا ہے۔

مرسلہ :سجاد احمد طاہری، صدر روحانی ر۔ ط۔ ج برانچ جگسی مسجد، ماتلی

 

وقت کا کیا کہنا

جو وقت ہاتھ سے نکل جائے وہ دوبارہ نہیں آتا اس لیے وقت کی اہمیت جانو۔

گذرے ہوئے مشکل وقت کو بھول جانا ہی بہادر لوگوں کی نشانی ہے۔

وقت کے ساتھ جتنا تیز بھاگو گے اتنا ہی جلد تھک جاؤ گے۔

جو وقت ہاتھ سے نکل جائے اس کی قدر و قیمت بعد میں معلوم ہوتی ہے۔

اچھے وقت کی امید رکھو اور اچھے وقت کا انتظار کرو۔

مرسلہ: وقاص احمد طاہری، ماتلی

 

احکام خداوندی

  • اور جو مال تم خرچ کرو گے وہ تمہیں پورا پورا دیا جائے گا اور تمہارا کچھ نقصان نہیں کیا جائے گا۔ (سورۃ البقر)
  • خدا کسی شخص کو اس کی طاقت سے زیادہ تکلیف نہیں دیتا۔ (سورۃ البقر)
  • اے اہل ایمان بہت گمان کرنے سے احتراز کرو کہ بعض گمان گناہ ہیں۔ (سورۃ الحجرات)

مرسلہ: محمد عظیم رونجہ طاہری، حب چوکی ضلع لسبیلہ

 

عجیب اتفاق

  • حضور اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم کا وصال بروز پیر ماہ ربیع الاول میں ہوا۔
  • حضرت قبلہ سوہنا سائیں نور اللہ مرقدہ کا وصال بھی بروز پیر ماہ ربیع الاول میں ہوا۔

 

  • حضرت خواجہ بہاؤالدین بخاری رحمۃ اللہ علیہ کا وصال ماہ ربیع الاول 73 سال میں ہوا۔
  • حضرت قبلہ سوہنا سائیں نور اللہ مرقدہ کا وصال بھی ماہ ربیع الاول 73 سال میں۔

 

  • حضرت خواجہ پیر مٹھا سائیں رحمۃ اللہ علیہ کا وصال 12 دسمبر میں ہوا۔
  • حضرت قبلہ سوہنا سائیں نور اللہ مرقدہ کا وصال بھی 12 دسمبر میں ہوا۔

 

  • حضرت خواجہ سراج الدین رحمۃ اللہ علیہ 7 ربیع الاول کو مسند نشین ہوئے۔
  • حضرت قبلہ سجن سائیں مدظلہ العالی بھی 7 ربیع الاول کو مسند نشین ہوئے۔

 

  • حضرت قبلہ سوہنا سائیں نور اللہ مرقدہ کی ولادت بروز منگل مارچ میں ہوئی۔
  • حضرت قبلہ سجن سائیں مدظلہ العالی کی ولادت بھی بروز منگل مارچ میں ہوئی۔

 

  • حضرت قبلہ سجن سائیں مدظلہ العالی کی ولادت 21 مارچ کو ہوئی۔
  • حضرت صاحبزادہ محمد یاسر کی ولادت بھی 21 مارچ کو ہوئی۔

مرسلہ: حافظ غلام مصطفیٰ طاہری، اسلامک سینٹر کراچی

 

گلدستہ

  • کوئی کام شروع کرو بسم اللہ کہو۔
    کچھ کرنے کا ارادہ کرو تو انشاء اللہ کہو۔
    کوئی اچھی چیز دیکھو تو سبحان اللہ کہو۔
    کوئی تکلیف ہو تو یا اللہ کہو۔
    کسی کا شکریہ ادا کرنا ہو جزاک اللہ کہو۔
    کسی غلطی پر افسوس ہو تو استغفر اللہ کہو۔

مسکرائیے

ایک آدمی نہر کے کنارے جارہا تھا کہ اچانک آندھی آئی اور وہ نہر میں گرگیا اس نے دعا کی ”اے اللہ مجھے سلامتی سے باہر نکال دے تو میں تیری راہ دیگیں چڑھاؤں گا۔“ اچانک تیز ہوا کا جھونکا آیا اور وہ نہر سے باہر نکل آیا لیکن نہر سے نکلتے ہی فوراً کہنے لگا ”کونسی دیگیں“ اچانک وہ پھر نہر میں گرگیا اور زور زور سے کہنے لگا ”یا اللہ میں تو پوچھ رہا تھا کہ کون سی دیگیں میٹھی یا نمکین؟“

مرسلہ: مصباح نورین، دوکوٹہ تحصیل میلسی ضلع وہاڑی

 

ایک نظم سجن سائیں کے نام

میرے سجن سائیں کا ہے اعلیٰ مقام
محبت اور بھائی چارہ ہے ان کا پیغام

اگر کوئی چاہے دوجہاں میں کامیابی
وہ بن کر رہے میرے سجن کا غلام

یہ ہیں وقت کے غوث اے دوستو
میرے رب کا ہے ان پر خاص انعام

خلاف شریعت اگر بات ہو تو کہنا
یہ سکھاتے ہیں دنیا کو مصطفوی نظام

برستی ہے یہاں رحمت خداوندی سدا
کبھی اک لمحہ تو کرکے دیکھو یہاں قیام

ان کا دیدار حقیقت میں دیدار مصطفیٰ
دور ہوتے ہیں غم جب لیتے ہیں ان کا نام

کہاں وہ بات دنیا کے میخانوں میں
ایسا پلایا ہے مرشد نے غلامی محمد کا جام

یہ لب کہاں تعریف کے لائق
میرے سجن سائیں تجھے سلام، تجھے سلام

مرسلہ: شکیل احمد طاہری، مولا مدد لیاری کراچی

 

لطیفہ

راہگیر ”ارے سارا دن بھیک مانگتے رہتے ہو اور اب رات کو بھی بھیک مانگ رہے ہو تمہیں شرم نہیں آتی۔“

بھکاری ”جناب یہ مہنگائی کا زمانہ ہے دن رات محنت کرنی پڑتی ہے۔“

مرسلہ: عزیز احمد طاہری، ٹنڈوالہیار

 

اقوال زریں

  • ضرورت بزدل کو بہادر بنا دیتی ہے۔
  • دشمن کو کبھی بھی کمزور نہ سمجھو۔
  • ناکامی کامیابی کی پہلی سیڑھی ہے۔

مرسلہ: غلام مصطفی پالاری، ٹنڈوالہیار

 

حضرت علی کرم اللہ وجہہ کے 18 سنہرے الفاظ

  • تین چیزوں کا احترام کرو: استاد، والدین، بزرگ۔
  • تین چیزوں کو ساتھ رکھو: سچائی، ایمان، نیکی۔
  • تین چیزوں کو یاد رکھو: احسان، نصیحت، موت۔
  • تین چیزوں کیے لیے لڑو: وطن، عزت، حق۔
  • تین چیزوں پر قابو رکھو: زبان، غصہ، نفس۔
  • تین چیزوں سے بچو: برائی، چغلی، حسد۔

مرسلہ: وفا نذیر احمد شر طاہری

 

قول حضرت علی کرم اللہ وجہہ

اگر کسی کا ظرف آزمانا ہے تو اسے زیادہ عزت دو، وہ اعلیٰ ظرف ہوگا تو آپ کو اور زیادہ عزت دے گا اور اگر کم ظرف ہوگا تو خود کو اعلیٰ سمجھے گا۔

مرسلہ: صدام حسین شر، احمد آباد (ٹھری میرواہ)