فہرست الطاہر
شمارہ 50، ربیع الاول 1429ھ بمطابق اپریل 2008ع

آپ کے خطوط

محترم قارئین!السلام علیکم!

خدا آپ کو خوش رکھے اور خوشیاں تقسیم کرنے کی توفیق بخشے۔ رسول اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم کے خوشیوں بھرے میلاد کے ماہ ربیع الاول میں شمارہ نمبر 50 کو حضور محبوب سجن سائیں دامت برکاتہم العالیہ کے ولادت نمبر کے طور پر پیش کیا جارہا ہے۔ اسی خوشی میں اس شمارہ سے ایک نئے انعامی سلسلے کا اضافہ کیا جارہا ہے۔ الطاہر کے ہر شمارہ میں موصول ہونے والے تمام خطوط میں سے سب سے بہتر تبصرہ کو انعامی تبصرہ قرار دیا جائے گا۔ لہٰذا آئندہ خط لکھتے وقت مضامین پر مکمل تبصرہ لکھنے کی کوشش کیجیے گا۔ امید ہے کہ آپ کے تعاون سے یہ سلسلہ جاری و ساری رہے گا۔

محمد جمیل عباسی طاہری


 

محترم جناب ایڈیٹرصاحب! السلام علیکم، شمارہ نمبر 49 ہاتھوں میں ہے، رسالہ میں تمام مضامین اپنی مثال آپ تھے، شدت سے نئے شمارے کا انتظار ہوتا ہے، رسالہ وقت پر شایع کرنے پر بہت خوشی ہوتی ہے، اس دقعہ خبرنامہ اور گلہائے رنگ رنگ میں حصہ لے رہا ہوں، امید ہے کہ مایوس نہیں فرمائیں گے۔ وفا نذیر احمد شر۔ دربار اللہ آباد شریف کنڈیارو


 

ایڈیٹرصاحب! شمارہ نمبر 49 کا مطالعہ کیا، بے حد پسند آیا۔ پہلی بار حصہ لے رہا ہوں، میں اگر کچھ مواد ارسال کروں تو آپ شایع کریں گے؟ شکریہ۔

صدام حسین شر۔ احمد آباد، ٹھری میرواہ

جناب صدام حسین صاحب یہ رسالہ آپ ہی کا ہے۔ بہتر مواد کا خیرمقدم کیا جائیگا۔


 

شمارہ نمبر 49 پڑھا تمام مضامین اچھے ہیں۔ افسوس کے ساتھ کہنا پڑتا ہے کہ جب سے رسالہ دو ماہی ہوا ہے اس عاجز ناچیز کو پہلی مرتبہ ملا ہے۔

صدام علی طاہری۔ پتھر کالونی حب بلوچستان


 

شمارہ نمبر 49 پڑھا تمام مضامین اچھے ہیں۔ میری یہ دعا ہے اللہ تعالیٰ الطاہر کو دن دوگنی رات چوگنی ترقی عطا فرمائے۔ آمین۔

محمد اسلم رونجہ طاہری ۔ پتھرکالونی حب بلوچستان


 

جناب ایڈیٹر صاحب میرا آپ کو ایک مشورہ ہے کہ آپ اپنے رسالے میں ہر بار انبیائے کرام، ازواج مطہرات، چاروں سلاسل کے بزرگوں کے بارے میں ایک مضمون ضرور ضرور شامل کریں اور ہر رسالے میں خواتین و بچوں اور نوجوانوں کے بارے میں بھی ایک مضمون ضرور ضرور شامل کریں۔ تمام مضامین مختصر ہوں تو اور بہتر ہے۔ امید ہے اس پر ضرور غور فرمائیں گے اور ایک نظم بھی بھیج رہا ہوں اسے بھی شامل کریں۔

شکیل احمد طاہری۔ مولامددلیاری کراچی


 

پچھلا رسالہ پڑھا تمام مضامین بہت ہی اچھے تھے۔ لیکن آپ سے ایک چھوٹی سی شکایت ہے کہ میں نے ایک مضمون ”سجن سائیں کی محبت اور کرامت“ بھیجا تھا مگر افسوس کہ میرا وہ مضمون شائع نہیں ہوا۔ اس مضمون کے بعد بھی پانچ رسالے آئے مگر میرا مضمون کسی ایک میں بھی شامل نہیں ہوا۔ کیا میں وجہ جان سکتا ہوں۔

فقیر نذیر حسین ۔ کراچی

محترم نذیر حسین صاحب آپ برائے مہربانی دوبارہ مضمون ارسال فرمائیں۔


 

بعد از سلام عرض ہے کہ بزم الطاہر میں عاجز کا یہ پہلا خط ہے۔ اول تو اپنے پیر و مرشد خواجہ محبوب سجن سائیں مدظلہ العالی کو انکی پینتالیسویں سالگرہ پر یہ ناچیز اپنے خلیفہ محمد موسیٰ منگیانی طاہری اور اہل برانچ کی طرف سے مؤدبانہ مبارکباد پیش کرتا ہے۔ دوسری یہ کہ اس معلوماتی و اصلاحی رسالے کو دوماہی کے بجائے ایک ماہی کیا جائے تاکہ لوگ کم عرصے میں زیادہ فائدہ حاصل کرسکیں۔ عاجز کے اس ناقص مشورے کو مدنظر رکھیے گا۔

فقیر بلال احمد طاہری۔ حب سٹی


 

شمارہ نمبر 49 پڑھا تمام مضامین اچھے ہیں۔ میری یہ دعا ہے اللہ تعالیٰ الطاہر کو دن دوگنی رات چوگنی ترقی عطا فرمائے۔ آمین۔

پیر بخش طاہری ۔ پتھرکالونی حب بلوچستان


 

آپ کا شایع کردہ الطاہر رسالہ موصول ہوا۔ پڑھ کر بہت خوشی ہوئی۔ یہ عاجز اپنی طرف سے کچھ ٹوٹے پھوٹے الفاظ کا مجموعہ بھیج رہا ہے۔ اگر آپ کے رسالے میں اس مواد کے لیے جگہ ہو تو ضرور شایع کیجیے گا۔

سلمان محمود


 

دوماہی رسالہ الطاہر کی ممبر شپ میں شامل ہونا چاہتی ہوں۔ برائے مہربانی اسکول کے ایڈریس پر کتابیں ارسال فرمائیے گا اور ربیع الاول کے حوالے سے جو بھی کتابیں موجود ہوں ارسال فرمادیجیے۔ محترم شبیر نیازی کی منقبت اور محفل مصطفیٰ کے حوالے سے کیسٹس بھی منگوانی ہیں اس کے بارے میں تفصیل بتائیے گا کہ کہاں سے ملیں گی؟

مس رئیسہ۔۔ اوباڑہ

محترم بہن الطاہر کی ممبر شپ کے لیے آپ سرکیولیشن مینیجر صاحب کے پتہ پر خط ارسال فرمائیں اور جماعت کی سی ڈیز وغیرہ کے لیے الاصلاح انٹرنیشل پروڈکشن الاصلاح کیسیٹ ہاؤس مارکیٹ روڈ دادو پر رابطہ فرمائیں۔


 

الطاہر پڑھا بے حد علم میں اضافہ ہوا اور درس قرآن نے بہت فائدہ دیا۔ امید ہے کہ آپ جیسے نوجوان اس رسالے کو اور زیادہ مستقبل میں ہر دل ہر صاحب علم کی چاہت بنائیں گے اور ہمارے حضرت صاحب کا تبلیغ کا نظام بھی اور مفید ثابت ہوگا۔ یہ خط میں پہلی بار لکھ رہا ہوں امید کرتا ہوں کہ یہ خط آپ ضرور شامل کریں گے۔ خط شامل ہونے سے مجھے بہت خوشی ملے گی۔

محمدرمضان مغل ۔ ماتلی


 

آپ کا پیارا رسالہ الطاہر ملا۔ حضور قبلہ عالم کا خطاب مبارک زیر مطالعہ ہے۔ یہ عاجز آپ کے اس پیارے الطاہر میں اپنی سوچ سمجھ کے مطابق کچھ مواد بھیج رہا ہے اس توقع پر کہ آپ اسے ضرور شایع کریں گے۔ یہ بات میرے لیے قابل فخر ہوگی جب آپ اس عاجز کا بھیجا ہوا مواد شامل کریں گے۔

وحید علی بھٹی


 

عرض یہ ہے کہ میں آپ کی طرف 15 روپے کی ڈاک ٹکٹ بھیج رہا ہوں برائے مہربانی مجھے الطاہر کا نیا شمارہ ارسال فرمائیں اور میں دوماہی الطاہر کا سالانہ خریدار بننا چاہتا ہوں۔

زاہد علی ابڑو۔ رتودیرو لاڑکانہ

زاہد صاحب اس مرتبہ آپ کو رسالہ بھیجا جارہا ہے مگر اس سلسلے کو مستقل جاری رکھنے کے لیے آپ سرکیولیشن مینیجر جناب محمد بخش جونیجو صاحب سے رابطہ کریں۔


 

الطاہر گرلز سیکنڈری اسکول دوکوٹہ کی جانب سے سالار سلسلہ نقشبند، مجدد دوراں، شیخ العلماء، ولی ابن ولی حضرت خواجہ محمد طاہر المعروف محبوب سجن سائیں مدظلہ العالی کی خدمت میں ان کی پینتالیسویں سالگرہ پر مبارک باد پیش کرتے ہیں۔ ہماری دلی دعا ہے کہ خدا تعالیٰ آپ کا سایہ ہمیشہ ہمارے سروں پر سلامت رکھے۔ آمین ثم آمین


 

شمارہ نمبر 49 ہاتھوں میں ہے اور پڑھ کر ایک تازگی کا احساس ہورہا ہے اور میرے پیارے مرشد کا خطاب مبارک تو ایسا اثر کرگیا کہ لفظوں میں بیان نہیں کرسکتا۔ رسالہ میں درس قرآن کی شدت سے کمی ہوئی۔ رسالہ دوماہی ہونے سے تبلیغ کا کام اور تیز ہوگا۔ اگر آپ Title کے Back Side صفحہ پر جماعت کے کسی شاعر کا کلام شائع کریں گے تو وہ طاہریہ پیغام پہنچانے میں اہم کردار ادا کرے گا اور وہ نعت یا منقبت ہو یہ دونوں سندھی میں ہوں تو کیا بات ہے۔ ایک اور بات یہ مارچ کا مہینہ تین عیدیں ایک ساتھ لایا ہے

  • حضور اکرم صلّی اللہ علیہ وسلم کی عید میلاد النبی
  • حضور قبلہ عالم کی ولادت
  • فقیر پورشریف میں عرس شریف بیاد حضور پیر مٹھا سائیں

اللہ تعالیٰ ہمیں ان کی حقیقی محبت نصیب فرمائے اور ان کے فرمودات پر عمل پیرا ہونے کی توفیق عطا فرمائے۔ نئی زندگی کے عنوان سے تحریر بھیجی تھی کیا وہ ردی کی نظر ہوگئی؟۔ کیا آپ کو Ideas دیے جاسکتے ہیں؟

محمد رفیق ۔ کراچی

بھائی محمد رفیق صاحب ہماری ردی کی ٹوکری اتنی پیٹو بھی نہیں ہے کہ آپ کا مضمون بلا ڈکار لیے ہضم کرجائے۔ آپ کا ارسال کردہ مضمون ابھی تک موصول نہیں ہوا اور رسالہ کی بہتری کے لیے آپ کے Ideas کا خیرمقدم کریں گے۔


 

شمارہ نمبر 49 ہاتھوں میں ہے پڑھ کر قلبی اطمینان و آسودگی حاصل ہوئی۔ میں نے الطاہر میں نفس کی حقیقت پڑھی جسے پڑھ کر اب میں نے بھی اپنا یہ ذہن بنالیا کہ نفس کو سرکشی کرنے سے تاحد طاقت کوشش کروں گا۔ برائے کرم میرے لیے دعا کیجیے گا۔ عاجز نے پاکستان میں شایع ہونے والے تقریباً رسائل پڑھے ہیں مگر الطاہر سب سے منفرد ہے۔ یہ ایک ایسا سلسلہ ہے جو اسلامی، معاشرتی، سائنسی، اخلاقی، علمی، تاریخی معلومات سے بھرپور ہے۔ اللہ عزوجل الطاہر کو اور ترقیاں عطا فرمائے۔

احسن علی طاہری ۔ نواب شاہ

محترم محمد احسن صاحب الطاہر کے لیے آپ کے نیک جذبات ہمارے لیے قابل قدر ہیں۔


 

گذارش ہے کہ آپ کی خدمت میں روحانی طلبہ جماعت یونٹ کرماں باغ کا تعارف شایع کرنے کے لیے ارسال کررہا ہوں۔ امید واثق ہے کہ اس تعارف کو الطاہر میں شایع کرکے مشکور کریں گے۔

زاہد علی لغاری طاہری۔ کرماں باغ لاڑکانہ

محترم محمد زاہد صاحب آپ کا مضمون طوالت کے باعث الطاہر کے صفحات کی زینت نہیں بن سکتا، برائے مہربانی آپ کسی دوسرے موضوع پر طبع آزمائی فرمائیں۔


 

میں نے شمارہ 48 سالانہ عرس مبارک کے موقع پر الطاہر کے اسٹال سے خریدلیا تھا اور اسٹال پر موجود نمائندہ کو رجسٹر میں درج کروادیا تھا کہ اب بذریعہ ڈاک نہ بھیجا جائے مگر چند دنوں کے بعد 25 عدد رسالے بذریعہ ڈاک موصول ہوگئے تھے جو کہ میرے پاس ویسے کے ویسے پڑے ہیں بنڈل کو کھولا بھی نہیں ہے

علی صابر طاہری ۔ دو کوٹہ ضلع وہاڑی

محترم علی صابر صاحب آپ اپنے مسئلہ کے حل کے لیے سرکیولیشن مینیجر جناب محمد بخش جونیجو صاحب سے رابطہ کریں۔


 

مؤدبانہ عرض ہے کہ اس عاجز نے شمارہ 49 میں جناب استاد محترم محمد حسن اوٹھو طاہری صاحب کا مضمون ہمارے تعلیمی نظام کے نقائص پڑھ کر کافی معلومات حاصل کی۔ اس عاجز کی طرف سے صاحب مضامین کو مبارک باد عرض کردیں۔ اللہ عزوجل الطاہر کی پوری ٹیم کو سدا خوش رکھے۔ آمین ثم آمین

محمد محی الدین صدیقی۔ گلشن حدید کراچی