الطاہر

الطاہر شمارہ نمبر 44
ربیع الاول ۱۴۲۸ھ بمطابق اپریل ۲۰۰۷ع

اردو مین پیج

گلہائے رنگ رنگ

 

فرمان رسول صلّی اللہ علیہ وسلم

٭حضرت عبداللہ بن عمرو بن العاص رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلّی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جو شخص جہنم سے دوری چاہتا ہے اور جنت میں داخل ہونا چاہتا ہے اور چاہتا ہے کہ اس حالت میں اس پر موت آئے کہ وہ اللہ تعالیٰ اور آخرت پر ایمان رکھتا ہوتو پھر وہ لوگوں کے ساتھ ایسا سلوک کرے جو اپنے لیے پسند کرتا ہو۔ (صحیح مسلم)

مرسلہ۔ ہومیو ڈاکٹر محمد اشرف ملک۔ بھریا روڈ

 

حکمت کے موتی

مرسلہ:سیماں طاہری۔۔دنبہ گوٹھ کراچی

 

اقوال حضرت عثمان غنی رضی اللہ تعالیٰ عنہ

مرسلہ:حافظ محمد انور قمبرانی طاہری۔۔بیلہ بلوچستان


اقوال زریں

مرسلہ: حمیر عباس انصاری۔۔ماتلی


اقوال زریں

مرسلہ۔ اسد علی جت۔ ٹھٹھہ


مجھے شکوہ ہے

مجھے شکوہ ہے ان لوگوں سے جو دوسروں کی خوشیوں میں تو شریک ہوتے ہیں مگر غموں میں نہیں۔

مرسلہ۔ رضوان علی طاہری۔ ٹول پلازہ کراچی

 

یادیں

ایک لفظ ہے مگر اپنے اندر پوری دنیا بسائے ہوئے ہے۔ یادیں تلخ، شیریں، حقیقت، خواب بھی ہوتی ہیں۔ یہ سرمایہ محبت بھی ہوتی ہیں، خوشی و مسرت اور غم کے گذرے ہوئے لمحات بھی یادیں بن کر ہمیشہ ہمیشہ ساتھ رہتے ہیں، کس کے ساتھ گذرا وقت یادیں بن کر ہمیشہ دل میں رہتا ہے اور یادوں میں انتظار ہی ہوتا ہے اور ملنے کی تمنا بھی۔

مرسلہ: ثمینہ کوثر ۔۔بھلیر والا

 

زندگی اور موت

میں نے بارہا سوچا، غور کیا موت کیا چیز ہے؟ زندگی سے اس کا کیا رشتہ ہے؟ اور ان میں کیا فاصلہ ہے؟

ایک دن میں نے ایک جہاز کو دیکھا، وہ ساحل سمندر سے روانہ ہورہا تھا اور آہستہ آہستہ دور ہورہا تھا یہاں تک کہ افق میں غائب ہوگیا۔۔۔ یہ دیکھ کر لوگوں نے کہا ”وہ چلاگیا“ میں نے سوچا اس ساحل پر کھڑے لوگ کہہ رہے ہیں ”وہ چلاگیا۔۔۔“ جب کہ یہاں سے دور کہیں ایک اور ساحل ہوگا وہاں کے لوگ اس ساحل پر کھڑے اس کے آنے کا ذکر کررہے ہونگے وہ اسے آتا دیکھ کر کہیں گے ”وہ آگیا“

میں نے سوچا کہیں اس کا نام تو موت نہیں۔۔۔ پرانی زندگی سے الوداع اور ایک نئی زندگی کا آغاز!

مرسلہ:محمد وسیم طاہری۔۔مہاجر کیمپ کراچی

 

اچھی باتیں

مرسلہ: فقیر خوش محمد طاہری۔۔لاڑکانہ

 

معلومات

مرسلہ:مولوی محمد زاہد طاہری

 

آنکھ

مرسلہ:محمد مبین گبول ۔۔کراچی

 

قدر

مرسلہ:محمد زبیر طاہری۔۔نوابشاہ

 

دوگھونٹ دو قطرے

رسول اللہ صلّی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے دو گھونٹ اللہ کو بہت پسند ہیں، ایک غصے کا اور دوسرا صبر کا۔ دو قطرے اللہ کو نہایت محبوب ہیں ایک جہاد میں خون کا قطرہ اور دوسرا آنکھ کا وہ قطرہ جو رات کی تنہائی میں صرف اللہ کے خوف سے نکلے۔

مرسلہ:سیماطاہری ۔۔دنبہ گوٹھ کراچی

 

اقوال زریں

سات چیزیں سات کو کھاجاتی ہیں:

مرسلہ:محمد رمضان طاہری جوکھیو ۔۔بندیجا اسٹاپ گڈاپ

 

قرآن پاک کے تراجم

مرسلہ:عبدالقیوم جت طاہری ۔۔ٹھٹھہ

 

خیالات سے مقدر تک

اپنے خیالات پر نظر رکھیے، یہ الفاظ کی شکل اختیارکرلیتے ہیں۔ اپنے الفاظ پر نظر رکھیے یہ اعمال کی شکل اختیار کرلیتے ہیں۔ اپنے اعمال پر نظر رکھیے یہ عادات میں تبدیل ہوجاتے ہیں۔ اپنی عادات پر نظر رکھیے یہ شخصیت کا روپ دھار لیتی ہے۔ اپنی شخصیت پر نظر رکھیے یہ آپ کا مقدر بن جاتی ہے۔

مرسلہ:رانا ماجدخان ۔۔بھریا روڈ

 

شعر

جناب آمنہ کا چاند جب نکلا زمانے میں
قمر کی چاندنی قدموں پر ہونے نثارآئی

حلیمہ دوجہاں قربان ہو تیرے مقدر پر
تیرے کچے سے مکان میں رحمت پروردگار آئی

مرسلہ:طارق مقصود طاہری۔۔وہاڑی

 

قسمت

قسمت پہیے کے چکر کی مانند گھومتی ہے جو کبھی اوپر جاتا ہے اور کبھی نیچے آتا ہے تم بھی جب اوپر جاؤ تو نیچے والوں کا ہاتھ تھام لو کیونکہ اگلے چکر میں تمہیں ان کی ضرورت پڑ جائے گی۔

مرسلہ :فقیر محمد خان طاہری کشمیری۔۔ماتلی

 

پانچ سورتیں پانچ چیزوں سے بچاتی ہیں

مرسلہ:محمد اویس طاہری۔۔ٹنڈوالہیار

 

اقوال زریں

مرسلہ: فقیر شبیر نعمان طاہری۔۔ٹنڈوالہیار

 

مسکراہٹ کی اہمیت

مرسلہ:غلام مرتضیٰ ملک طاہری۔۔ٹنڈوالہیار

 

اقوال زریں

مرسلہ۔ گل ناز لاڑک۔ پنجوڈیرو

 

مہکتی کلیاں

مرسلہ۔ ساجد علی گجر طاہری۔ فیصل آباد

 

مہکتی کلیاں

مرسلہ۔ عبدالواجد۔ ملتان

 

منقبت

میں ڈب گئی وچ گناہاں مینوں آن بچائیں پیرا

میں بھری آں نال پلیتی مینوں پاک بنائیں پیرا

وچ کشتی اے گھمن گھیری مینوں آگئی اے رات ہنیری

نئیں تدھ بن کوئی ڈھیری پیرا خبر لویں ہن میری

کریں مدد سجن سائیں مینوں پار لگائیں پیرا

مرسلہ مسز اعجاز۔۔راولپنڈی

 

بچہ

مرسلہ۔ حافظ غلام مصطفی اعوان۔ اسلامک سینٹر کراچی

 

جھاڑیوں میں

ایک نشئی اندھیری رات میں راستے سے چلا جارہا تھا اور اس کے آگے ایک جگنو اڑتا ہوا جارہا تھا۔ نشئی نے اسے دیکھ کر کہا ”بھائی صاحب کچھ تو میرے لیے بھی بچانا“ اتنے میں جگنو جھاڑیوں میں بیٹھ گیا تو اس نشئی نے دکھی ہوکر کہا ”واہ بھئی واہ سگریٹ جھاڑیوں میں پھینک دیا مگر مجھے نہ دیا“

مرسلہ۔ محمد حفیظ اجمل بوزدار طاہری۔ ٹنڈوالہیار

 

چار کا ہندسہ

مرسلہ۔ محمد اشرف طاہری۔۔ٹنڈوالہیار

 

ماں

 ماں پھول ہے انمول ہے جو کھلتا نہیں گلزاروں میں
ماں ہیرا ہے نایاب ہے جو ملتا نہیں بازاروں میں

مرسلہ:صائمہ محمد یونس

 

ہنسنا منع ہے

دو چوہے جنگل سے گذر رہے تھے سامنے سے شیر کا بھی گذر ہوا۔ ایک چوہے نے کہا آؤ اس کی پٹائی لگائیں یہ بہت اکڑتا ہے۔ دوسرے نے کہا چھوڑو یار بیچارہ اکیلا ہے اور ہم دو۔

مرسلہ۔ خلیل احمد کمبوہ طاہری۔ ٹنڈوالہیار

 

غائب دماغ پروفیسر

ایک فزکس کا پروفیسر اپنے شاگردوں کو پڑھا رہا تھا۔ پروفیسر صاحب نے شاگردوں کو کہا ”بھائی آج ہم ایک مینڈک کا تجربہ کرنے والے ہیں اور مینڈک میری جیب میں ہے“ پروفیسر صاحب نے جیب میں ہاتھ ڈالا اور کچھ نکالا تو شاگردوں نے کہا سر آپ کے ہاتھ میں تو پیٹیز ہے۔ پروفیسر نے کہا کمبختو پھر صبح میں نے کیا کھایا تھا۔

مرسلہ: قاری فرحان احمد انڑ ۔۔نواب شاہ

 

سنہری کرنیں

مرسلہ: اسامہ عباسی