فہرست
سیرت ولی کامل (حصہ اول)
قُدوۃ الاولیاء حضور قبلہ عالم حضرت محمد طاہر نقشبندی مد ظلہ المعروف محبوب سجّن سائیں کا خصوصی پیغام

پیام و ہدایت

تحریر

پیر طریقت حضرت الحاج مولانا محمد طاہر صاحب مدظلہ
سجادہ نشین آستانہ عالیہ اللہ آباد شریف، کنڈیارو، سندھ

یہ کتاب مستجاب، بے مثال و لاجواب ”سیرت ولی کامل“ جو اس وقت آپ کے زیر مطالعہ ہے، یہ بے شمار مراحل سے گزر کر پایہ تکمیل کو پہنچی ہے۔

اس میں قبلہ و کعبہ مرشدی و سندی اور مربی حضرت سوہنا سائیں نور اللہ مرقدہ کی سیرت طیبہ اور حالات و واقعات بیان کئے گئے ہیں۔ حضرت قبلہ پیر و مرشد سوہنا سائیں رحمۃ اللہ علیہ کی عادت مبارکہ تھی کہ خود بھی سید الکونین صلّی اللہ علیہ وسلم کی شریعت مطہرہ کی پابندی فرمائی، اور جو آپ کے دامن سے وابستہ ہوا، اسے بھی اسی رنگ میں رنگ دیتے اور حضرات نقشبندیہ کی نظر میں یہ کمال باقی سب کمالات سے بڑھ کر ہے۔ جو شخص چاہتا ہے کہ وہ تصوف کے حقائق و معارف سے آگاہ ہو، اسے شریعت مصطفوی کے متبعین حضرات کی صحبت اختیار کرنی چاہیے۔ اور ان کتب کا مطالعہ کرنا چاہیے جو سیرت اولیاء کرام، ان کے ملفوظات و مکتوبات پر مشتمل ہوں۔ ایسی کتب کی اہمیت اس وقت اور بھی بڑھ جاتی ہے جب اس کو اپنے شیخ و مقتدیٰ کی ظاہری صحبت حاصل نہ ہو۔

یہ ”سیرت ولی کامل“ کی جلد اول کی دوسری اشاعت ہے۔ جس طرح اس کتاب کے تحریر کرنے کے مراحل استاذ المحترم حضرت قبلہ حبیب الرحمٰن صاحب مدظلہ العالی نے طے فرمائے تھے، اسی طرح اس اشاعت ثانی کو بھی بہتر بنانے اور اغلاط سے پاک کرنے میں جو شبانہ روز محنت سے کام لیا ہے، یہ ان کی والہانہ محبت و عقیدت ہے جو ان کو میرے شیخ مقتدیٰ رحمۃ اللہ علیہ سے حاصل ہے، اللہ تعالیٰ ان کو اس کا اجر عظیم عطا فرمائے۔

حضرت علامہ مولانا انوار المصطفےٰ اور لاہور کے دیگر ارباب محبت کا تعاون ہماری تقویت کا باعث بنا۔ اللہ تعالیٰ ان حضرات کو اجر عظیم سے سرفراز فرمائے۔

جملہ فقراء مریدین اور معتقدین کو تاکید کی جاتی ہے کہ اس کتاب کو مسلسل اپنے مطالعہ میں رکھیں۔ یہ کتاب ان کے لئے ایک راہنما کی حیثیت رکھتی ہے۔ انشاء اللہ یہ ان کے اہل خانہ اور احباب کی ہدایت و فلاح کا ذریعہ بنے گی۔

حضرت علی المرتضیٰ رضی اللہ عنہ ارشاد فرماتے ہیں

فاِنَّ المَالَ یَغنِی عَنقَرِیبٍ
وَ اِنَّ العِلمَ باقٍ لَا یَزَال

یعنی مال و دولت عنقریب فنا ہوجائے گا۔ لیکن علم باقی رہنے والا ہے اور اس کو کبھی زوال نہ ہوگا۔ مال و دولت سے محبت نہ کریں، ”سیرت ولی کامل“ کی صورت جو علم منصبۂ شہود پر آچکا ہے اس کو اپنے لئے اور احباب کو تحفۃ دینے کے لئے مال و دولت کو خرچ کر دیں۔ پھر بھی یہ فنا نہیں ہوگا، انشاء اللہ۔

فقیر محمد طاھر بخشی نقشبندی
۱۸ ربیع الثانی ۱۴۱۵ھ